بریکنگ نیوز

دہشتگردوں کی حرکات پر نظر رکھنے کی ضرورت ہے

گزشتہ روز صوبہ خیبرپختونخوا کے ضلع باجوڑ میں پاک افغان سرحد پر سیکیورٹی فورسز کی چیک پوسٹ پر سرحد پار سے دہشت گردوں کی فائرنگ کے نتیجے میں پاک فوج کا ایک جوان شہید جبکہ دوسرا زخمی ہوگیا۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ(آئی ایس پی آر)کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل بابر افتخار کے ٹوئٹر پیغام کے مطابق باجوڑ میں سیکیورٹی فورسز کی سرحدی چوکی پر فائرنگ کی گئی، جس کے نتیجے میں حوالدار تنویر نے جام شہادت نوش کیا۔ دریں اثناء کوئٹہ میں سمنگلی روڈ پر دھما کے میں 7افراد زخمی ہو گئے ۔نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے زیر تعمیرپل پر کام کرنے والے مزدوروں پر دستی بم پھینکا جس کے نتیجے میں پانچ مزدور اور دو بچے زخمی ہوگئے ہیں۔ہماری رائے میں پاکستان دشمن عناصر وطن عزیز میں دہشتگردی اور فرقہ واریت کی فضاء پیدا کرکے حالات کو خراب کرنے کے درپے ہیں اور اس حوالے سے ان کی تخریبی کارروائیوں میںاضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔ دہشتگردی کے عفریت کو کچلنے کیلئے پاک فوج نے مختلف آپریشنز کے ذریعے بڑی کامیابیاں حاصل کیں لیکن دہشتگرد عناصر ابھی بھی اپنی کمین گاہوں میں روپوش ہیں اور انہیں جب بھی موقع ملتاہے اپنے آقائوں کے اشارے پر وہ پاکستان میں تخریبی کارروائیاں شروع کردیتے ہیں۔ بھارت کو جب اس بات کا ادراک ہوا کہ حکومت پاکستان کسی طور بھی سی پیک کو رول بیک کرنے کیلئے تیار نہیں کیونکہ چین اور پاکستان سی پیک منصوبے کی تکمیل کیلئے پرعزم اور پر اعتماد ہیں۔ چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبہ اور گوادر پورٹ پر کام کی رفتار میں تیزی آئی ہے اور منصوبے اگلے اور آخری مراحل میں داخل ہورہے ہیں جس کی تکلیف امریکہ کے ساتھ ساتھ بھارت کو بھی ہے۔ بھارت اپنی ناکامیوں ، خطے اور عالمی سطح پر ہزیمت اور رسوائی کا بدلہ پاکستان سے لینے پر تلا بیٹھا ہے۔ پاکستان کو عالمی سطح پر تنہائی کا شکار کردینے والا مودی خود سفارتی تنہائی کا شکار ہوگیا ہے ۔ عالمی سطح پر اگر اس وقت بھارت کیلئے کوئی شنوائی ہے تو وہ صرف اور صرف ڈونلڈ ٹرمپ اور اس کے حواریوں کے باعث ہے وگرنہ بھارت کی ساکھ عالمی سطح پر بری طرح متاثر ہوئی ہے کیونکہ دنیا کو نریندر مودی جیسے سفاک اور درندہ صفت شخص کا اصل چہرہ دیکھائی دینے لگا ہے جس کے باعث عالمی سطح پر بھارت کی سیکولراز م اور نام نہاد جمہوریت کی رٹ بے معنی ہوکر رہ گئی ہے۔ دنیا نے بھارت میں نریندر مودی کی وزارت عظمی کی دوسری ٹرم کے دوران بھارت کے مکروہ عزائم اور توسیع پسندانہ ایجنڈے کو بخوبی سمجھ لیا ہے۔ اس کے برعکس پاکستان کا ایک نرم اور اچھا تاثر بھی عالمی سطح پر سامنے آیا ہے کہ پاکستان کو عالمی سطح پر بدنام کرنے اور پاکستان کے چہرے کو دنیا کے سامنے دہشتگرد کے طور پر پیش کرنے والا بھارت خود دہشتگردی کا مرتکب پایا گیا اور حال ہی میں امریکہ کے ایک ادارے کی طرف سے رپورٹ میں بھارت کے دہشتگردی میں ملوث ہونے کے شواہد سامنے آنے پر عالمی سطح پر بھارت کو سبکی اور رسوائی کا سامنا کرنا پڑا۔ اب یہ ہمارے دفترخارجہ اور دنیا میں موجود سفارتی مشن کی مہارت پر منحصر ہے کہ وہ بھارت کے مکروہ اور اصل چہرے کو دنیا کے سامنے لانے میں ایک متحرک کردار ادا کریں۔ فیٹف کی گرے لسٹ میں پاکستان کو شامل کرانے میں بھارت کا ایک کلیدی کردار رہا ۔ امریکہ ، اسرائیل اور انڈیا کا گٹھ جوڑ اسلام دشمنی اور خاص طور پر پاکستان دشمنی میں کمال مہارت سے دنیا کو گمراہ کرنے کا فن جانتا ہے ۔ ہماری رائے میں ہماری حکومت اور دفتر خارجہ کیلئے امریکہ کی حالیہ رپورٹ جس میں منی لانڈرنگ اور دہشتگردی کے حوالے سے بھارت کے ملوث ہونے کے شواہد شائع کئے گئے ہیں کو بنیاد بناکر بھارت کو فیٹف کی بلیک لسٹ میں شامل کرنے کیلئے کوششیں کی جاسکتی ہیں۔ یہ اللہ کا بڑا احسان ہے کہ بھارت کے کردہ گناہ اور پاکستان کے خلاف دہشتگردی کا کارڈ استعمال کرنے کا سارا وبال خود اس پر پلٹ گیا ہے۔ باجوڑ خیبر پختونخوا میں سرحد کے اس پار سے پاک فوج پر فائرنگ اور اسی طرح کوئٹہ بلوچستان میں زیر تعمیر پل پر کام کرنے والے غریب مزدوں پر دستی بم حملہ دہشتگردی کی بدترین مثال ہے کہ اپنے مکروہ اور جارحانہ مقاصد کیلئے دہشتگرد اور ان کے ماسٹر مائنڈ ایک دیہاڑی دار مزدور کو بھی نہیں بخشتے۔ کیونکہ ان کا مقصد صرف اور صرف دہشتگردی کا پھیلائو اور خوف و ہراس پیدا کرنا ہوتا ہے۔ بھارت اب مذہبی منافرت اور فرقہ واریت کو ہوا دینے کیلئے اپنے زرخرید ایجنٹوں کو استعمال کرکے علماء کو نشانہ بنانے کے گھنائونے منصوبے پر عملدر آمد کررہا ہے۔ پوری قوم خاص طور پر تمام مکاتب فکر کے علماء کو دشمن کی اس چال کو سمجھتے ہوئے اتحاد بین المسلمین اور یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے دشمن کے عزائم کو خاک میں ملانا ہوگا۔

About admin

Check Also

عالمی استحصالی قوتوں کی مفاداتی سیاست کے باعث ہی آج دینا کا امن خطرے میں ہے۔

اگلے روز وزیر اعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *