بریکنگ نیوز

بھارتی جنگی جنون اور جرائم عالمی برادری کیلئے لمحہ فکریہ ہونا چاہئے

گزشتہ روزلائن آف کنٹرول (ایل او سی)دیوا سیکٹر میں بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ کے نتیجے میں پاک فوج کے 28 سالہ سپاہی نبیل لیاقت شہید ہوگئے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر)کے مطابق بھارتی فوج نے دیوا سیکٹر پر ایل او سی کی خلاف ورزی کی۔ پاکستانی فوج نے بھارتی اشتعال انگیزیوں کا بھرپور جواب دیا جس سے دشمن کو شدید جانی نقصان اٹھانا پڑا۔ دوسری طرف شمالی وزیرستان میں دہشتگردوں کیساتھ جھڑپ میں 3 جوانوں سپاہی ازیب احمد، ضیا السلام اور لانس نائیک عباس خان نے جام شہادت نوش کیا۔ہماری رائے میں بھارت اپنی ناکامیوں کا منہ چھپانے کیلئے انتہائی حد تک جنگی جنون میں مبتلا ہوچکا ہے اور وہ اپنا خبط باطن وہ لائن آف کنٹرول پر بلااشتعال اور بلاجواز گولہ باری کرکے اور اسی طرح بلوچستان اور پختونخواء میں اپنے آلہ کار دہشتگردوں کے ذریعے پاکستان میں انتشار اور عدم استحکام کی کوششیں کررہا ہے تاکہ پاکستان کی معاشی ترقی اور سی پیک کے تحت جاری منصوبہ جات کو سبوتاژ کیا جاسکے۔ اسی حوالے سے چند روز قبل پاک فوج کے ترجمان جنرل افتخار بابرنے ایک پریس کانفرنس کے دوران بھارت کی طرف سے جاری جنگی جنون اور پاکستان کے اندر دہشتگردی پھیلانے کے حوالے سے تفصیل سے اظہار خیال کرتے ہوئے بتایا تھا کہ ایک طر ف مشرقی سرحد اور لائن آف کنٹرول پر بھارتی شرانگیزی جاری ہے تو دوسری طرف مغربی سرحد پر کالعدم دہشت گرد تنظیموں کی طرف سے پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنے کیلئے سازشیں کی جارہی ہیں۔اس میں کوئی دو رائے نہیں کہ پاک فوج نے بے پناہ قربانیوں کے ذریعے نہ صرف بھارتی عزائم اور سازشوں کو کنٹرول کیا بلکہ وطن عزیز کے اندر پاکستان دشمن طاقتوں خاص طور پربھارت کی طرف سے دہشتگردی کے نیٹ ورکس کو بھی نابود کردیا ہے۔ان قربانیوں کا تسلسل جاری ہے اور اس حقیقت کے باوجود کہ دہشتگردی عفریت کو کافی حد تک قابو میںکیاجاچکا ہے اور اسی طرح لائن آف کنٹرول پر پاک فوج کے جوان ہروقت الرٹ رہتے ہیں۔ ضرورت پڑنے پر وطن عزیز پر اپنی جان بھی قربان کرتے ہیں۔ پاک فوج اپنی جوابی کارروائی میں اپنے ہدف کو نشانہ بناتی ہے تاکہ لائن آف کنٹرول کے اس پار بسنے والی کشمیری عوام کو بھی محفوظ رکھا جائے اور بزدل بھارتی فوجیوں کو بھی نشان عبرت بنایا جائے۔ چالاک اور مکار قابض بھارتی فوج اسی لئے بلااشتعال اور اندھادھند فائرنگ کرتی ہے کہ اس کا نشانہ پاک فوج کے ساتھ ساتھ آزاد کشمیر میں لائن آف کنٹرول کے قریب بسنے والی سول آبادیاں بھی ہوتی ہیں تاکہ وہ عوام کے حوصلوں کو پست کرسکے۔ مشاہدے میں آیا ہے جس طرح مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج اپنی جارحیت اور سفاکی سے ظلم و ستم کے پہاڑ توڑ کر نہتے کشمیریوں کو سرنگوں کرنے کی کوششوںمیں ناکام نظر آتی ہے کیونکہ بہادر کشمیری عوام نے کسی طور بھی بھارت کی فوجی طاقت اور بھارتی تسلط کو تسلیم نہیں کیا۔ اسی طرح یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ آزاد کشمیر میں لائن آف کنٹرول کے قریب آباد عوام گزشتہ کئی دہائیوں سے بھارتی جارحیت کا بہادری سے مقابلہ کررہی ہے۔ جانی اور مالی نقصان کے باوجود ان کے حوصلے بلند ہیں اور وہ پاک فوج کے ساتھ دفاع وطن میں ایک کلیدی کردار ادا کرتے ہیں۔ اس حوالے سے اگلے روز آزاد کشمیر کے وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر خان کا کہنا تھا کہ آزاد کشمیر کے عوام پاکستان کا دفاعی حصار ہیں اور ضرورت پڑنے پر پوری قوم سیسہ پلائی دیوار کی طرح پاک فوج کے شانہ بشانہ کسی بھی بھارتی جارحیت کو خاک میں ملادیں گے۔ بھارت کے غیرقانونی اور غیر اخلاقی اقدامات اس خطے کے امن اور سلامتی پر سوالیہ نشان ہیں۔ایسی فوج جو اقوام متحدہ کے مبصرین پر بھی حملہ کرنے سے باز نہیں آتی اس سے لگام دینا اور کیفر کردار تک پہنچانا اب ضروری ہوچکا ہے۔اقوام متحد ہ امریکہ کی دوغلی اور دہری پالیسی کے باعث مجبور اور بے بس ہے۔ عالمی برادری اور انصاف پسند ملکوں کو امریکہ اور بھارت پر دبائو بڑھانے کی ضرورت وگرنہ ایک خوفناک جنگ جو بالکل تیار ہے،تاہم پاکستان کی امن پسندی ،خطے کی سلامتی اور عالمی امن کی خواہش کے باعث موخر ہے لیکن جس وقت پاک فوج کا صبر کا پیمانہ لبریز ہوگیا اور بھارت کو بڑے لیول پر جواب دیا گیا تو پھر یہ جنگ خطے اور عالمی امن کیلئے بہت بڑا خطرہ ثابت ہوگی۔

About Aziz

Check Also

آرمی چیف کا دورہ قطر انتہائی اہمیت کا حامل ہے

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باوجوہ کا حالیہ دو روزہ قطر بلاشبہ انتہائی اہمیت کا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *