بریکنگ نیوز

کورونا وائرس کے باعث چھ ماہ سے بندپرائمری سکولز کھل گئے ،تدریسی سرگرمیوں کا آغاز

 اسلام آباد :عالمی وبا کورونا وائرس کے باعث چھ ماہ سے بند پرائمری سکولز میں تدریسی سرگرمیوں کا آغاز ہوگیا ۔پنجاب، سندھ اور خیبرپختونخوا میں نرسری سے پانچویں تک کے بچے خوشی خوشی سکول پہنچ گئے اور تدریسی سرگرمیوں کا باقاعدہ آغاز ہو گیا ۔ تفصیلات کے مطابق لاہور میں بھی پرائمری سکولوں میں تعلیمی سرگرمیاں شروع ہوگئیں، شفٹ دو حصوں میں تقسیم کی گئی ہے۔ کلاس کی آدھی تعداد ایک دن آئے گی جبکہ باقی دوسرے دن حاضری یقینی بنائے گی، شفٹ کو بھی 4 گھنٹے تک محدود کر دیا گیا۔ 6ماہ کے بعد سکول آنے پر بچے بھی خوش ہیں۔فیصل آباد، ملتان، گوجرانوالہ سمیت پنجاب کے چھوٹے بڑے شہروں میں پرائمری سکولز کھل گئے،

کورونا ایس او پیز پر عمل درآمد لازم قرار دیا گیا ہے۔ راولپنڈی، اسلام آباد میں بھی پہلی سے پانچویں تک کلاسز میں پڑھائی شروع ہوگئی۔ بچوں کی بڑی تعداد ماسک لگا کر خوشی خوشی سکول پہنچی، سکولوں کے باہر اور اندر ایس او پیز پر بھی عملدرآمد نظر آیا۔پشاور سمیت خیبر پختونخوا میں پرائمری سکول کھل گئے، صوبے میں سرکاری پرائمری سکولوں کی تعداد 27 ہزار ہے۔ پہلے روز کورونا سے بچا ئوکے ایس او پیز پر مکمل عملدرآمد ہر جگہ نظر آیا۔ کوئٹہ سمیت بلوچستان میں بھی پرائمری سکولوں میں بچوں کی بڑی تعداد سکول پہنچی، ایس او پیز پر عملدرآمد بھی کیا گیا۔سندھ میں 28 ستمبر سے پرائمری سکولوں میں تعلیمی سرگرمیاں بحال ہوچکیں، ماسک کے بغیر سکول میں داخل ہونے کی پابندی ہے۔ ایس او پیز پر عملدرآمد لازمی قرار دیا گیا ہے۔ والدین کا کہنا تھا کہ بچے 6ماہ کے وقفے کے بعد اسکول آنے کے لئے بہت پرجوش تھے۔اساتذہ نے کہا کہ بچے چھوٹے ہیں اس لیے ان کا زیادہ خیال رکھ رہے ہیں ، کلاس رومز میں بچوں کو احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کے بارے میں بھی بتایا جاتا ہے۔

About admin

Check Also

ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کرنیوالے سکولوں کیخلاف کارروائی کی جائیگی ،شفقت محمود

اسلام آباد:وفاقی حکومت نے ملک بھر میں (آج ) بدھ سے پرائمری سکولز کھولنے کا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *