بریکنگ نیوز

بلین ٹری سونامی منصوبہ ہماری خوشحالی و ترقی کا ضامن ہے،سردار میر اکبر

مظفر آباد(بیورو رپورٹ) وزیر جنگلات سردار میراکبرخان نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے تمام شعبوںمیں ضروری اصلاحات لانے کے لیے اہم اور مؤثر اقدامات کیے ہیں جس سے لوگوں کی مشکلات میں کمی آرہی ہے مسلم لیگ ن کی حکومت کی تین ترجیحات ہیںپہلی ترجیح تحریک آزادی کو آگے بڑھانا تھا جس کے لیے بھرپور کاوشیں کی گئیں،
دوسری ترجیح گڈ گورننس تھی اس میں بھی ہم نے بہت بہترین کارکردگی دکھائی این ٹی ایس سے تعلیم کے شعبہ میں بڑا انقلاب آیا ہے بائیو میٹرک کا سسٹم متعارف کرایا گیا جس سے اساتذہ کی حاضری بہتر ہوئی پی ایس سی کا نظام بہتر کیا ختم نبوت پر قانون سازی ہوئی این ٹی ایس حکومت کا اہم کارنامہ ہے تحریک آزادی ہماری حکومت کی پہلی ترجیح تھی بائیو میٹرک کا اقدام سے معیار تعلیم میں اضافہ ہوا موجود ہ حکومت نے قادیانی فتنہ کو ختم کیاحکومت کے بروقت اقدامات کے باعث ہم کرونا میں بڑی تباہی سے بچ گئے۔ جنگلات کسی بھی معیشت کی ریڑھ کی ہڈی ہوتے ہیں 1947 ء میں یہاں جنگلات اچھے تھے بعدازاں جنگلات کو بہت نقصان پہنچایا گیا۔ 1947 ء میں ہماری آبادی 8 لاکھ تھی آج 42 لاکھ ہے۔ آبادی کا یہ دباؤ جنگلات پر بھی بڑھا ہے۔ 1997 ء میں سبز درختوں کے کاٹنے پر سپریم کورٹ نے پابندی لگائی جو آج بھی جاری ہے۔

بلین ٹری سونامی منصوبہ ہماری خوشحالی و ترقی کا ضامن ہے اس منصوبہ کو کامیاب کرنے کے لیے ہر شخص کو اپنا کردار ادا کرنا ہو گا کسی بھی ملک کے جنگلات قدرتی ماحولیاتی نظام کی بقاء ، دھرتی کے حسن میں اضافہ، زرعی و صنعتی معیشت کے استحکام اور آنے والی نسلوں کے محفوظ مستقبل کے ضامن ہوتے ہیںجنگلات کے اصل مالک عوام ہیںمحکمہ جنگلات اور عوام کے درمیان ایک تعلق ہونا چاہیے تاکہ جنگلا ت کی حفاظت کو یقینی بنایا جا سکے جنگلات ہمار ا زیور ہیں اور یہ ہمار ا حسن اور لباس ہیں درخت جسم و روح کے رشتہ کو قائم رکھنے کے لیے انسانی و حیوانی مخلوق کو آکسیجن مہیا کر نے کے لیے ناگزیر ہیں۔ جب تک کرہ ارض پر ماحولیاتی توازن برقرار رہتا ہے انسان، جانوروں اور دیگرمخلوق کے لیے ماحول سازگار رہے گاآزادخطہ کو تعمیر وترقی سے آراستہ کرنا اور اسے سرسبز و شاداب رکھنا بھی ہمارا اولین فرض ہے بلین ٹری منصوبہ میں آزادکشمیر کو شامل کرنے پر وزیراعظم پاکستان اور حکومت پاکستان کے شکرگزار ہیں۔ہم نے بھی اپنے بجٹ سے شجر کاری مہم کے لیے خطیر رقم مختص کی ہے۔ محکمہ جنگلات کے لیے اس منصوبہ کی کامیابی بہت بڑا چیلنج ہے ریاست بھر میں رواں سال شجر کاری کو کامیاب بنانے کے لیے خصوصی اقدامات کیے گے ہیںپروٹیکشن کمیٹیاں بنائی جائیں تاکہ درختوں کی حفاظت کو یقینی بنایا جا سکے۔ شجرکاری و شجر پروری اور جنگلات کی حفاظت کرنا صرف حکومت اور محکمہ جنگلات کی ذمہ داری ہی نہیں بنتی بلکہ یہ پوری قوم کی اجتماعی ذمہ داری ہے۔جب تک ہم سب مل کر اس ذمہ داری کو نہیں نبھائیں گے کامیابی کا حصول ناممکن ہے ان خیا لات کا اظہار انہوں نے ایک نجی ٹیلی ویثرن کو انٹرویو دیتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ72سال میں پہلی بار ہم مالی وسائل میں خود کفیل ہوئے حکومت پاکستان کا بھی شکریہ کہ اس نے بجٹ میں کوئی کٹ نہیں لگایاتیرہویں ترمیم سے وسائل میں اضافہ ہوا ہے ہماری حکومت کی ہر شعبہ میں کارکردگی بہت عمدہ ہے

About admin

Check Also

مقبوضہ کشمیر کے عوام دنیا کی سب سے بڑی دہشتگردی کا مقابلہ کررہے ہیں،راجہ فاروق حیدر

اسلام آباد(بیورو رپورٹ)وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہا ہے کہ مقبوضہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *