بریکنگ نیوز

بھارتی فوج بھاری ہتھیاروں سے لائن آف کنٹرول پر شہری آبادی کو نشانہ بناتی ہے،میجر جنرل بابر افتخار

راولپنڈی:ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے کہا ہے کہ بھارتی فوج بھاری ہتھیاروں سے لائن آف کنٹرول پر شہری آبادی کو نشانہ بناتی ہے، اشتعال انگیزی کا مقصد عالمی توجہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے ہٹانا ہے،2014 سے سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزیاں بڑھ گئی ہیں،کشمیریوں کو ان کی سرزمین پر یرغمال بنادیا گیا ہے ، مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی صورتحا ل سنگین ہے، بھارت کشمیریوں پر مظالم ڈھاکر انسانی حقوق کی مسلسل خلاف ورزیاں کررہا ہے ، مقبوضہ کشمیر کی صورتحال نے خطہ کو یرغمال بنالیا ہے،مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہونا چاہئے۔ ان خیالات کااظہار میجر جنرل بابر افتخار نے اسلام آباد میں تعینات غیر ملکی سفیروں ، دفاعی اتاشیوں اور عالمی اداروں کے نمائندوں کو لائن آف کنٹرول کے دورے کے موقع پر جوڑا سیکٹر میں بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔ غیر ملکی سفیروں کی ملاقات بھارتی فائرنگ سے متاثر ہونے والے مقامی افراد سے کرائی گئی۔ بھارت کی جانب سے استعمال کئے گئے اسلحہ اور کلسٹر بموںکے ٹکڑے بھی انہیں دکھائے گئے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ بھارت کی جانب سے سول آبادی کو دانستہ طور پر نشانہ بنایا جارہا ہے اور بھارت کلسٹر بم بھی استعمال کررہا ہے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ 2014سے لائن آف کنٹرول پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیاں میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے،
بھارت جان بوجھ کر شہری آبادی کو بھاری ہتھیاروں سے نشانہ بناتا ہے اور بھارت کی جانب سے اشتعال انگیزیاں اس لئے کی جارہی ہیں کہ اس وقت بھارت میں اقلیتوں پر جاری ظلم و ستم سے توجہ ہٹائی جائے اور مسئلہ کشمیر سے بھی توجہ ہ ٹائی جائے۔ انہوں نے کہا کہ عالمی ادارے خصوصاً اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ادارے نے بھارتی مظالم پر ایک مفصل رپورٹ لکھی ہے جس میں بھارت کے مظالم کو بے نقاب کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 2020میں 2333 بار لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزیاں کی گئیں ، بھارتی فوج جان بوجھ کر لائن آف کنٹرول پر شہری آبادی کو نشانہ بناتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ رواں سال سیزفائر معاہدہ کی خلاف ورزیوں کے نتیجہ میں 18شہری شہید ہوئے جبکہ 185معصوم شہری بھارتی بلااشتعال فائرنگ کے نتیجہ میں زخمی ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی جانب سے جو ہتھیار استعمال کئے جاتے ہیں وہ بھی بین الاقوامی قوانین کی سخت خلاف ورزی ہے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ اقوام متحدہ کے فوجی مبصر مشن کی پاکستانی علاقوں کے دورے پر کوئی پابندی نہیں جبکہ بھارت ایسا نہیں کرنے دے رہا۔

About admin

Check Also

خالی آسامیوں کے حوالے سے عدالتوں میں زیر التوا معاملات فوری یکسو کئے جائیں ،سردار میراکبر

مظفر آباد (بیورو رپورٹ) وزیر جنگلات سردار میراکبرخان کی زیر صدارت محکمہ جنگلات کامحکمانہ اجلاس …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *