بریکنگ نیوز

1947 کے جہاد کشمیر میں مولانا عبداللّٰہ کا قائدانہ کردار قابل فخر ہے،عبدالرشید ترابی

راولا کوٹ :جماعت اسلامی کفل گڑھ و یوتھ وینگ کے زیر اہتمام (وسطی باغ) بمقام ہائی سکول کفل گڑھ سلیکٹیٹ کارکنان جماعت و نوجوانان کی کارنر میٹنگ۔جس میں جماعت کے کارکنان اور موثر شخصیات کی بڑی تعداد میں شرکت۔عبدالرشید ترابی ممبر قانون ساز اسمبلی و چئیرمن پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے علاوہ اس اہم پروگرام میں قیم جماعت ضلع باغ سید ظہیر گردیزی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر ریڈ فاؤنڈیشن،ساجد شفیق،عثمان انور سابق امیر ضلع باغ،داود ایوب، و دیگر کی شرکت اور خطاب کیا۔عبدالرشید ترابی نے کہاکہ کفل گڑھ میرا روحانی اور سیاسی مرکز ہے۔1947 کے جہاد کشمیر میں مولانا عبداللّٰہ کا قائدانہ کردار قابل فخر ہے۔مولانا کے مشن کو جماعت اسلامی آگے بڑھا رہی ہے!!!۔اہلیان کفل گڑھ نے مجھے ہمیشہ عزت دی اور یہاں کے بزرگوں نے میری سرپرستی کی جس پر میں ہمیشہ مشکور رہوں گا!!1996 کا الیکشن جیتنے کے بعد باغ سے بدمعاشی اور غنڈا گردی کلچر کا خاتمہ کیا۔میرٹ کی بحالی کی عدالتی جنگ لڑی۔حلقہ میں بلاتخصیص ترقیاتی سکیمیں دییں اور پہلی دفعہ ممبر اسمبلی کا فنڈ متعارف کرایا۔ملازمین ہمیشہ انتقامی کارروائیوں کا شکار ہوتے رہے میں اسمبلی میں تھا یا نہیں ہر ملازم کے خلاف کی جانے والی انتقامی کارروائی کے خلاف کھڑے رہا۔2001 کا الیکشن میں ہار گیا اور اس حلقہ سے جیتے والے ممبر اسمبلی کے ہاتھ میں 50ملازمین کی فہرست برائے انتقامی تبادلے تھمائی گی جیسے میں نے رکوایا۔ 2006کا جیتا ہو الیکشن ہار گیا لیکن اہلیان کفل گڑھ نے اکثریت ووٹ مجھے دیا ۔یہاں سے انتقامی سیاست کا ایک بار پھر آغاز ہوا جس کے سامنے میرے ووٹرز نے استقامت دیکھاء اور میں نے بھی ہر محاذ پر مقابلہ کیا

۔2011 کے الیکشن میں بہترین سیاسی حکمت عملی کے تحت حلقہ کے عوام کو سیاسی رول دیا جیسے ناکام کیا گیا یہ سیاسی غلطی تھی جس کی تلافی کے لیے وقت درکار ہے۔تاریخ میں سیاسی غلطیوں کی تلافی نہیں ملتی۔بدنصیبی کے لمبے ہاتھ ہوتے ہیں!!!2016 کے الیکشن میں مسلم لیگ ن کے ساتھ اتحاد کر کے اتحادی ٹکٹ حاصل کر سکتا تھا لیکن 2011 کے کردار پھر سامنے آگئے، مناسب سمجھا کہ الیکشن چھوڑ دیا جاے۔ چنانچہ فری ہینڈ ملنے کے باوجود برادری کی بنیاد پر یہ الیکشن ہار گے اس طرح ثابت ہوا کہ محض برادری کی بنیاد پر الیکشن جیتنا ناممکن ہے!!!2016 کے الیکشن کے نتیجے میں مجھے براے راست سیٹ پر اسمبلی ممبر بننے کا موقعہ ملا،میں اور مشتاق منہاس نے مل کر حلقہ میں ریکارڈ ترقیاتی منصوبوں دییے ۔میرٹ پر تقرریاں ہوئیں۔ کفل گڑھ میں 23کروڑ روپے مالیت کے ترقیاتی کام ہوے اور 25کے قریب پڑھے لکھے نوجوان میرٹ پر ملازم ہوگئے۔پورے حلقہ میں سوا ارب روپے کے منصوبے ہماری اتحادی حکومت نے دییاور تقریباً 350 پڑھے لکھے نوجوانوں کی میرٹ پر تقرریاں ہوئیں۔بہت سارے معاملات پر اسمبلی کے اندر قانون سازی میں اہم کردار ادا کیا۔اس کے ساتھ ساتھ کشمیر کی آزادی کے لیے اندرونی اور بیرونی فورمز پر اہم کردار ادا کیا۔نوجوانوں نے آئندہ موقعہ دیا تو ہم سے بہتر خدمت کؤی نہیں کر سکے گااس اہم میٹنگ سے امیر ضلع باغ جناب تنویر انور نے بھی خطاب کیا،اپنے خطاب میں گزشتہ الیکشن میں جماعت اسلامی کی سیاسی حکمت عملی کے نتیجے میں ترابی کا اسمبلی میں پہنچنا بہت بڑی کامیابی قرار دیا جس کے نتیجے میں ریاست بھر میں ترقیاتی منصوبوں کے علاؤہ میرٹ کی بحالی ہوئ،شفاف پبلک سروس کمیشن تشکیل دیا گیا،ختم نبوت کا قانون بنا اور تحریک آزادی کشمیر کے لیے بھرپور کردار ادا کیا گیا!!!!صدر مجلس راجہ محمد عارف نے ترابی کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا اور تعاون کا بھرپور یقین دہانی کروائ۔

About admin

Check Also

مقبوضہ کشمیر کے عوام دنیا کی سب سے بڑی دہشتگردی کا مقابلہ کررہے ہیں،راجہ فاروق حیدر

اسلام آباد(بیورو رپورٹ)وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہا ہے کہ مقبوضہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *