بریکنگ نیوز

مہذب قومیں اپنے تاریخی ورثہ کی حفاظت کرتی ہیں۔ ترقی کے سفر نے ہمیں اپنے ثقافتی ورثہ سے دور کر دیا ہے،راجہ فاروق حیدر

مظفرآباد:وزیر اعظم آزادحکومت ریاست جموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ مہذب قومیں اپنے تاریخی ورثہ کی حفاظت کرتی ہیں۔ ترقی کے سفر نے ہمیں اپنے ثقافتی ورثہ سے دور کر دیا ہے۔ لال قلعہ مظفرآباد ہمارا قدیم ثقافتی ورثہ ہے جس کو دوبارہ سے مرمت کر کے اسے اصل حالت میں بحال کریں گے۔اس قلعے کے ساتھ ساتھ تاریخ قلعہ شاردہ کی بھی مرمت وبحالی کے لیے بھی فنڈز مختص کیے گئے ہیں۔ حکومت آثا ر قدیمہ کو محفوظ بنانے کے لیے بھرپور مالی اور انتظامی تعاون جاری رکھے گی۔ آثار قدیمہ کے لیے مختص رقبہ جات پر کسی قسم کی تجاوزات کو برداشت نہیں کریں گے۔ کشمیر کی ثقافت بہت پرانی اور اہمیت کی حامل ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز مظفرآباد لال قلعہ کی تنزین و آرائش اور مرمتی کے منصوبہ کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہو کیا۔ یہ منصوبہ محکمہ سیاحت و آثار قدیمہ کے زیر اہتمام 140.340ملین روپے کی لاگت سے دو سال کے اندر مکمل کیا جائے گا۔

جس پر لاہور والڈ سٹی اتھارٹی نے کام شروع کر دیا ہے۔ تقریب سے وزیرا طلاعات و سیاحت راجہ مشتاق احمد منہاس،سیکرٹری سیاحت،اطلاعات و آئی ٹی محترمہ مدحت شہزاد، ڈائریکٹر جنرل سیاحت ارشاد احمدپیرزادہ، لاہور والڈ سٹی اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل کامران لاشاری، ڈائریکٹر نجم الثاقب اور تاریخی چک خاندان کے نمائندہ شہزاد چک ایڈووکیٹ نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر سیکرٹری سیاحت اور ڈائریکٹر جنرل سیاحت نے وزیر اعظم کو منصوبہ کے حوالہ سے تفصیلی بریفنگ دی۔ تقریب میں چیئرمین وزیراعظم معائنہ وعملدرآمد کمیشن زاہد امین کاشف،چیف سیکرٹری آزادکشمیر ڈاکٹر شہزاد خان بنگش، انسپکٹر جنرل پولیس صلاح الدین محسود، پرنسپل سیکرٹری احسان خالد کیانی، سیکرٹری جنگلات ظہور الحسن گیلانی، سیکرٹری لوکل گورنمنٹ اعجاز احمد خان، سیکرٹری اوقاف سردار جاوید ایوب، سیکرٹری سپورٹس ظفرنبی بٹ، لال قلعہ کے تاریخی پس منظر سے تعلق رکھنے والے خاندان کے نمائندگان، سول سوسائٹی اور مختلف مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے شرکت کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیرا عظم آزادکشمیر نے کہا کہ لال قلعہ کے ساتھ ریاست جموں وکشمیر کی قدیم ثقافت جڑی ہوئی ہے۔ اس کی مرمتی اس طرح سے کی جائے گی کہ یہ ایک ICONبن سکے۔۔اس مقصد کے لیے حکومت نے معروف تعمیراتی فرم لاہور والڈ سٹی اتھارٹی کی خدمات حاصل کی ہیں تاکہ اس قدیم ثقافتی ورثے کو آنے والی نسلوں کے لیے محفوظ بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ پوری دنیا کی مہذب اقوام اپنے ثقافتی ورثہ کی حفاظت کو یقینی بناتی ہیں۔ ہمارے ہاں اس کا رواج کم رہا ہے جس کی وجہ سے ہمارا قدیم ورثہ ضائع ہو رہا ہے لیکن موجودہ حکومت نے اپنے ثقافتی ورثہ کو محفوظ بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اطلاعات و سیاحت راجہ مشتاق احمد منہاس نے کہا کہ عالمی معیشیت میں اس وقت سیاحت کا شعبہ اہم کردار ادا رکر رہا ہے۔ ہماری حکومت نے اقتدار میں آتے ہی فیصلہ کیا کہ ہم اپنے تاریخی ورثے کی حفاظت کریں گے۔ لال قلعہ مظفرآباد کی مرمتی کا منصوبہ اس سلسلہ کی ایک کڑی ہے۔ اس قلعہ کے ساتھ عظیم کشمیری ثقافت اور چک خاندان کی تاریخ وابستہ ہے۔سیکر ٹری اطلاعات و سیاحت محترمہ مدحت شہزاد نے کہا کہ سیاحت آزادکشمیر کی معشیت میں ریڑھ کی ہڈھی کی حیثیت رکھتی ہے۔ موجود ہ حکومت نے سیاحت کی ترقی کے لیے اہم اقدامات کیے ہیں جن میں ٹورازم پالیسی کی منظوری،ٹورازم پولیس کا قیام، آرکیالوجیکل سائٹس کا سروے, ٹورازم پروموشن ایکٹ کی منظوری. میوزیم کا قیام شامل ہیں۔ لال قلعہ کی مرمتی کے بعد اس کے اردگرد سیاحوں کے لیے سہولیات کے لیے ریسٹورنٹس،ہینڈی کرافٹ بازار اور فوڈ سٹریٹ قائم کریں گے۔ آزادکشمیر میں سیاحوں کو معلومات کی فراہمی کے لیے ٹورازم ایپ بھی لانچ کر دی گئی ہے۔ جس سے سیاحوں کو معلومات حاصل ہو سکیں گی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل لاہور والڈ سٹی اتھارٹی کامران لاشاری نے کہا کہ لال قلعہ مظفرآباد شہر کا ایک ICONپراجیکٹ ثابت ہو گا۔ اس کے ساتھ 500سال قبل کی ثقافت جڑی ہوئی ہے۔ ایسے منصوبہ جات بہت کم حکومتیں شروع کرتی ہیں۔ حکومت آزادکشمیر کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں کہ اس نے اس طرف توجہ دی اور یہ منصوبہ شروع کیا۔

About admin

Check Also

کروناوائرس ابھی ختم نہیںہواہے یہ ایک بارپھرعوام کومتاثرکررہاہے،ڈاکٹر سردار عمر اعظم

کوٹلی:ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر سردار عمر اعظم خان کی زیر صدارت ایس ایس پی کوٹلی راجہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *